Grameen Bank At A Glance - Page 4

  1. گرامین بینک کی تخلیق کردہ کمپنیاں

    درج ذیل وہ کمپنیاں ہیں جو کہ گرامین نیٹ ورک کا حصہ دار نہیں اور انہیں بینک کی مالی معاونت سے ایک الگ قانونی حیثیت میں شروع کیا گیا۔ ان کمپنیوں کو سرمایہ فراہم کرتے ہیں بینک ڈونر شامل ہیں ۔ اس سرمایہ کا اجراء بطور قرض گرامین بینک نے ہی کیا:

    • گرامین فنڈ کے ذمے واجب الادا قرضے (373.2 ملین ٹکہ ) 6.38 ملین ڈالر ہیں۔
    • گرامین قرشی فاؤنڈیشن کے ذمہ( 19 ملین ٹکہ ) 0.33 ملین ڈالر۔
    • گرامین مٹوشو فاؤنڈیشن 15 ملین ٹکہ یعنی 0.26 ملین ڈالر ۔
    • گرامین کلیان:

      گرامین بینک نے ڈونر کے سرمایہ سے جو منافع حاصل ہوا اُسے استعمال میں لاتے ہوئے گرامین کلیان کے نام سے ایک کمپنی کی تشکیل کی جس کا مقصد بینک کے قرض خواہاں کی فلاح و بہبود ہے تا کہ اُن کی تعلیمی ۔ صحت اور پیشہ وارانہ ضروریات پوری کی جا سکیں۔

  2. موت کی صورت میں قرضہ معافی

    اگر قرض دار کی موت واقع ہو جائے تو قرض کی باقی ماندہ رقم لون انشورنس کے پروگرام سے ادا کی جاتی ہے ۔ اس پروگرام کے تحت ایک انشورنس فنڈ قائم کیا گیا۔ اور رقم کی فراہمی کیلئے ہر قرض دار کو 3% کے حساب سے اس فنڈ میں رقم جمع ہو۔ اگر موجودہ بیلنس برابر ہے تو رقم جمع کرانی پڑتی ہے۔

    قرض کی انشورنس پروگرام کو شوہروں تک کےلیےبڑھا دیا گیا ہے۔بشمول قرض اکاونٹ میں اضافی رقم جمع کر نا۔اگرقرض لینے والے کے شو ہر کا انتقال ہو جائے تو اس کا متعلقہ قرض معاف کر دیا جائے گا۔اور وہ متعلقہ خاتون مزید قرض لے سکتی ہے جیسا کہ اس نے پہلے کا قرض ادا کر دیا ہو۔

    لون انشورنس سیونگ اکاؤنٹ میں اب تک کی جمع شدہ رقم 67.66 ملین ڈالر یعنی5 45670.0 ملین ٹکہ ہے 3 مئی 2009 ئ تک 130437انشورڈ قرض دہندہ عورتیں /خاوند مر گئے ۔ اُن کے قرضہ جات بمعہ قرض سود 981.94 ملین ٹکہ یا 14.83 ملین ڈالر اسی فنڈ کے ادا کئے گئے۔ قرض دہندہ کے خاندان کو ادائیگی نہیں کرنا پڑے گی۔ چونکہ قرض دہندہ نے لواحقین کے کوئی قرضے کا بوجھ نہ چھوڑا۔

  3. بیمہ زندگی

    ہر سال قرض دہندہ کی موت کی صورت میں انشورنس کی مدد سے ادا کئے 20 ملین ٹکہ یا 0.25/0.29 ملین ڈالر کی ادائیگی کی جاتی ہے۔ اس مد سے ہر خاندان 1500 ٹکہ جبکہ مجموعی طور پر 207.91 ملین ٹکہ یا 4.26 ملین ڈالر ادا کئے گئے اور ساتھ ہی قرضے کی ادائیگی کی معافی بھی شامل تھی۔یہ فرد جو کہ گرامین بینک کا شئیر ہولڈر ہے اس سکیم سے مستفید ہوتا ہے

  4. جمع شدہ سرمایہ

    مئی 2009ئ گرامین بینک میں جمع شدہ سرمایہ (Deposit) 68.33 بلین 989.98 ملین ڈالر تھی۔ سرمایہ جمع کرانے والے لوگوں میں ہر ماہ 2.11% کا امتیاز اور پچھلے 12 ماہ سے بڑھ رہے ہیں۔

  5. قرض دہندہ کیلئے پینشن فنڈ کا قیام

    وقت گزرنے کے ساتھ قرض دہندہ بوڑھا اور کمزور ہو جاتا ہے۔ اور جب وہ کمانے کے قابل نہیں رہتا تو اس وقت اسے سہارے کی ضرورت زیادہ ہوتی ہے اس صورت حال سے نپٹنے کیلئے گرامین بینک اس پروگرام کا آغاز کیا تا کہ بوڑھے لوگوں کی مدد کی جا سکے۔ اس کیلئے پینشن فنڈ برائے بڑھاپہ شروع کیا اسے بہت پذیرائی حاصل ہوئی۔

    اس سکیم میں شمولیت کیلئے ہر قرض خواہ کو 50 ٹکہ یعنی 0.73یو ایس ڈالر دس سال کیلئے جمع کرانے پڑتے ہیں۔ دس سال ختم ہونے پر دوگنی رقم اسے ادا کی جاتی ہے جو کہ اسے ضروریات کیلئے مہیا ہوتی ہے۔ مئی2009 تک اس مد میں 23.13بلین ٹکہ یعنی 335.05 ملین ڈالر جمع ہو گئے ہیں اس رقم میں 5.81 بلین 84.55 ڈالر کا اضافہ ہوا۔ اور توقع کی جاتی ہے 2009ئ تک 26.50 بلین ٹکہ یعنی 385.62 ڈالر تک پہنچ جائے گی۔

  6. نا قابل واپسی قرضہ جات

    گرامین بینک نا قابل واپسی قرضہ جات سیکیورٹی کیلئے بہت محتاط پالیسی اختیار کرتا ہے۔ اگر قرضہ وقت مقررہ پر واپس نہیں ہوتا تو اسے (Flexible Loan ) میں تبدیل کر دیا جاتا ہے۔ دوسرے سال اس قرضہ کا سود نصف جبکہ ادائیگی ممکن نہ رہے تو تیسرے سال سود معاف کر دیا جاتا ہے مگر قرض کی اصل رقم ادا کرنا پڑتی ہے۔

    مئی 2009ئ اس مد میں 5.5 بلین ٹکہ (80.09 ڈالر ) موجود ہیں اس فنڈ میں 2008ئ تک قرض کی مد میں 0.50 ملین ٹکہ ادا کیا گیا۔ جبکہ 2008 ئ میں 1.53 بلین ٹکہ معاف کئے گئے قرضہ جات کی وصولی کی گئی ۔

  7. ریٹائرمنٹ بینیفٹ فنڈ

    گرامین بینک کی ریٹائرمنٹ شفٹ فنڈ کے قیام کو عوام نے بہت سراہا ۔ جو ہر 10 سال سے زیادہ مدت ملازمت پر ریٹائر کرتا ہے ۔ اسے نقد رقم ادا کی جاتی ہے اور کوشش کی جاتی ہے کہ ایک ماہ کے اندر اسے تمام Benefits مل جائیں۔ 7493 ملازمین ریٹائر ہوئے جنہیں 4.68 بلین ٹکہکی رقم ادا کی گئی جو کہ فی کس 10649ڈالر یا 0.62 ٹکہ بنی ہے گذشتہ سال 474 افراد فارغ ہوئے تو انہیں 471.00 ملین ٹکہ (6.85 ڈالر ) ادا کئے۔ اوسط ہر سٹاف 14451 ڈالر یا 0.990 ملین ٹکہ ادا کیا گیا۔

  8. خواتین ٹیلی فون

    گرامین بینک نے موبائل فون خریداری کیلئے عورتوں کو رقم فراہم کی جنکی تعداد 358141 ہے اور اب قریب بنگلہ دیش کے نصف دیہی آبادی کو ٹیلی فون کی سہولت فراہم ہو چکی ہے یہ خواتین اس سہولت سے اپنے کاروبار میں بہت معاون پاتی

    اس کے ساتھ ساتھ یہ عورتیں ٹیلی کمیونیکیشن سیکٹر میں بہت اہم کردار ادا کر رہی ہیں ۔ اور گرامین فون کی آمدن میں اضافہ بھی کر رہی ہیں۔ گرامین فون بنگلہ دیش کی سب سے بڑی فون کمپنی بن چکی ہے بقیہ 2820 ٹیلی فون خواتین 2.22% ایئر ٹائم گرامین فون کا استعمال کر کے اس کمپنی کو کامیاب کیے ہوئے ہیں۔